نسیم شاہ نے ایک بار پھر افغان ٹیم کی امیدوں پر پانی پھیر دیا

نسیم شاہ نے ایک بار پھر افغان ٹیم کی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔ 3 ایک روزہ میچوں کی سیریز کے دوسرے میچ میں پاکستان نے افغانستان کو ایک وکٹ سے شکست دے دی۔ ہدف کے تعاقب میں پاکستانی اننگز کے آغاز پر فخر زمان 30 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہو گئے۔ امام الحق کا ساتھ دینے کے لیے کپتان بابر اعظم میدان میں آئے اور دونوں نے 118 رنز کی عمدہ شراکت قائم کر کے اپنی ٹیم کی پوزیشن مستحکم کرنے کی کوشش کی۔
170 کے مجموعی سکور پر بابر اعظم فضل حق فاروقی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔ محمد رضوان 2 رنز بنانے کے بعد 176 کے اسکور پر رن آؤٹ ہوئے، سلمان علی آغا 14 رنز بنانے کے بعد محمد نبی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔ اسی اوور میں محمد نبی نے اسامہ میر کو کیچ آؤٹ کیا۔ دوسرے سرے پر امام الحق 91 کے سکور پر مجیب الرحمان کی گھومتی گیند کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔

پاکستان کی ساتویں وکٹ 46.2 اوورز میں 258 کے سکور پر گری جب افتخار احمد 17 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

شاداب خان 48ویں اوور میں 48 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ پاکستان نے 301 رنز کا ہدف آخری اوور سے ایک گیند قبل حاصل کر لیا۔ نسیم شاہ ایک بار پھر کرائسس مین ثابت ہوئے اور حارث رؤف کے ساتھ انتہائی مشکل حالات میں اہم 10 رنز بنائے جو 3 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔ اس سے قبل افغانستان نے پاکستان کو جیت کے لیے 301 رنز کا ہدف دیا۔ ہمبنٹوٹا میں جاری سیریز کے دوسرے ون ڈے میں افغان اوپنرز نے شاندار کھیل کا مظاہرہ کیا۔
افغانستان کی پہلی وکٹ چالیسویں اوور میں 227 رنز پر گری جب ابراہیم زدران 80 رنز بنا کر اسامہ میر کی گیند پر افتخار احمد کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔ رحمان اللہ گرباز نے 151 رنز کی شاندار اننگز کھیلی اور شاہین آفریدی کا شکار بنے جنہوں نے اسی اوور میں راشد خان کو بھی آؤٹ کیا۔ محمد نبی 29، راشد خان 2 اور شاہد اللہ صرف ایک رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔
پاکستان کی جانب سے شاہین آفریدی نے 2، اسامہ میر اور نسیم شاہ نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔ اس سے قبل دوسرے میچ میں افغان ٹیم کے کپتان حشمت اللہ شاہدی نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے خلاف اچھی کارکردگی دیکھنا چاہتے ہیں۔ ٹیم میں دو تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ پہلے ون ڈے میں ریٹائر ہونے والے رحمت شاہ اور عظمت اللہ عمرزئی سیریز سے باہر ہو گئے ہیں، ان کی جگہ ریاض حسن اور شاہد کمال کو پلیئنگ الیون میں شامل کیا گیا ہے۔
قومی ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے کہا کہ ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی، میچ جیت کر سیریز جیتنے کی کوشش کریں گے۔ سیریز کے پہلے میچ میں پاکستان نے افغان ٹیم کو 142 رنز کے بڑے مارجن سے شکست دی تھی۔ دونوں ٹیمیں ایشیا کپ اور ورلڈ کپ جیسے میگا ایونٹس کی تیاری کے لیے سیریز کھیل رہی ہیں، تینوں میچز کی میزبانی افغان بورڈ سری لنکا میں کر رہا ہے۔
اس سے قبل پاکستان اور افغانستان کی ٹیمیں 5 ون ڈے میچز میں آمنے سامنے آ چکی ہیں جس میں قومی ٹیم کامیاب رہی تھی۔ پاکستانی سکواڈ کپتان بابر اعظم، امام الحق، فخر زمان، محمد رضوان، افتخار احمد، آغا سلمان، شاداب خان، اسامہ میر، شاہین شاہ آفریدی، نسیم شاہ اور حارث رؤف پر مشتمل ہے۔ افغانستان اسکواڈ میں کپتان حشمت اللہ شاہدی، رحمان اللہ گرباز، ابراہیم زدران، ریاض حسن، محمد نبی، راشد خان، مجیب الرحمان، فضل الحق فاروقی، شاہد کمال، عبدالرحمان اور اکرام علی شامل ہیں