جموں کشمیر تحریک حق خودارادیت انٹرنیشنل کی طرف سے بھارتی جیلوں میں گرفتار کشمیری لیڈروں کی رہائی کیلئے بھرپور مہم جاری

بریڈفورڈ (پریس ریلیز) جموں کشمیر تحریک حق خودارادیت انٹرنیشنل کی طرف سے بھارتی جیلوں میں گرفتار کشمیری لیڈروں کی رہائی کیلئے بھرپور مہم جاری۔ برطانیہ وزراء اینڈریوسٹیفینسن ، سٹیورٹ اینڈریو ، لیبر پارٹی کی ڈپٹی لیڈر انجیلا رینر، شیڈو منسٹر بیرسٹر عمران حسین ایم پی اور دیگر راہنماؤں سے ملاقاتیں۔ جموں کشمیر تحریک حق خوداردیت انٹرنیشنل دیگر کشمیری تنظیموں سے مل کر برطانیہ بھر میں ممبران پارلیمنٹ سے ذاتی رابطوں اور پارلیمنٹ میں آل پارٹیز کشمیر کانفرنس کر کے اس مسلۓ کو برطانیہ بھر میں موثر طریقے سے اجاگر کرے گی۔ برطانیہ کے مختلف شہروں میں تقریبات منعقد کرنے کے بعد اٹھارہ جولائی کو برطانوی پارلیمنٹ میں آل پارٹیز کشمیر کانفرنس منعقد ہوگی جس سے کشمیری زعماء اور ممبران پارلیمنٹ خطاب کریں گے۔ملاقاتیں کرنے والے وزراء اور ممبران پارلیمنٹ نے تحریکی عہدیداران کو اپنی بھرپور حمایت کا یقین دلاتے ہوۓ کہا کہ وہ مقبوضہ کشمیر کے ان راہنماؤں کی رہائی کیلئے برطانوی حکومت سے بات چیت کریں گے۔ ان کی پوری کوشش ہوگی کہ بھارتی حکومت تک برٹش کشمیریوں کا نکتہ نظر اور برطانوی حکومت کا احتجاج بھی پہنچایا جاۓ۔ اس سلسلے میں تحریک حق خودارادیت انٹرنیشنل کے عہدیداروں نے جہاں Pudsey کے ممبر آف پارلیمنٹ اور سپورٹس کے وزیر سٹیورٹ انڈریو سے ملاقات کر کے اس مہم کا آغاز کیا جس کے بعد لیبر پارٹی کی ڈپٹی لیڈر انجیلا رینر کے دورۂ بریڈفورڈ کے دوران جہاں اسے یسین ملک کی رہائی کی پٹیشن دی وہیں شیڈو وزیر بیرسٹر عمران حسین ایم پی اور سینئر وائس چئیرمین آل پارٹیز کشمیر پارلیمنٹری گروپ کو بھی JKSDMI کی کیمپین سے آگاہ کیا ان سے مطالبہ کیا کہ وہ لیبر پارٹی کے اندر اپنی لیڈرشپ، شیڈو وزیر خارجہ، اور دیگر راہنماؤں کو اپنا ھمنوا بنا کر برٹش کشمیریوں کا نکتہ نظر نہ صرف پارلیمنٹ میں پیش کرنے میں معاونت کریں بلکہ اسے پارٹی کے اندر آنے والی سالانہ کانفرنس میں اٹھائیں۔ اسی طرح تحریک کے عہدیداروں نے Nelson میں برطانوی وزیر اینڈریو سٹییفینسن سے ملاقات کر کے کنزرویٹو مسلم فورم نارتھ ویسٹ کے عہدیداروں سابق کونسلر محمد نواز، سابق کونسلر محبوب احمد، اور چئیرپرسن CMF ثمینہ خان کی معاونت سے کشمیریوں کی پٹیشن اور مسلۂ کشمیر کے حوالے سے تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کیا۔ JKSDMI کے عہدیداروں راجہ نجابت حسین (ستارۂ پاکستان)، سردار عبدالرحمان خان، ہیری بوٹا اور دیگر راہنماؤں نے برطانوی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ مسلۂ کشمیر کو حل کروانے میں اپنا کردار ادا کریں اور مقبوضہ کشمیر کی تمام سیاسی لیڈرشپ کو رہا کروائیں جنہیں بغیر کسی ثبوت کے بھارت کی مختلف جیلوں میں قید رکھا گیا ہے بالخصوص جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے راہنما یسین ملک کی رہائی کے متعلق جو پٹیشن برطانوی وزیراعظم کو دی گئی تھی اسی پٹیشن کی مناسبت سے تمام ممبران پارلیمنٹ کو استدعا کی گئی ہے کہ وہ اپنے اپنے انتخابی حلقوں میں مقامی کشمیریوں حق راۓ دھندگان سے مل کر کام کریں۔ بھارت کی نیشنل انویسٹیگیشن ایجنسی کے نام نہاد مقدمات میں پھنسے کشمیری راہنماؤں کو بری کروانے میں اپنا کردار ادا کریں۔ جموں کشمیر تحریک حق خودارادیت انٹرنیشنل کے مستقبل کے پروگرامز میں ڈپٹی مئیرز، سٹی مئیرز، لارڈ مئیرز، کونسلرز، کشمیر دوست ممبران پارلیمنٹ کی شرکت سے مسلۂ کشمیر کے حل کو مزید تقویت ملے گی ریاست جموں کشمیر کی تحریک آزادی کو برطانیہ و یورپ کے ایوانوں اور سفارتی و سیاسی محاذ پر بہتر انداز میں پیش کیا جائیگا تاکہ کشمیری اپنا بنیادی و پیدائشی حق حاصل کر سکیں جس کا پاکستان و بھارت کی حکومتوں کے علاوہ دنیا بھر کی اقوام نے سلامتی کونسل کی قراردادوں کی صورت میں تسلیم کر رکھا ہے۔